بڑا دشوار ہوتا ہے

بڑا دشوار ہوتا ہے

ذرا سا فیصلہ کرنا

کہ جیون کی کہانی کو

بیانِ بے زبانی کو

کہاں سے یاد رکھنا ہے

کہاں سے بھول جانا ہے

اِسے کتنا بتانا ہے

اِسے کتنا چھپانا ہے

کہاں رو رو کے ہنسنا ہے

کہاں ہنس ہنس کے رونا ہے

کہاں آواز دینی ہے

کہاں خاموش رہنا ہے

کہاں رَستہ بدلنا ہے

کہاں سے لوَٹ آنا ہے

(سلیم کوثر)

فائزہ سے شکریہ کے ساتھ، والسلام

اسماء

Advertisements

5 تبصرے »

  1. Anonymous said

    asma.. kafi dinoon say koi woh kia kehtye hain… wazan wali poem nahi aayi….
    try to post some good stuff…

  2. Dinky Mind said

    bohat khoob!

    Sachi baat bataoun. Mujhay kabhi kabhar bari jealousy hoti hay aap ki iss collection say. I wish I had books filled with such awesome poetry.

    Well, now I have this blog. I am glad. Thanks for posting such awesome material.

    Cheerio =)

  3. اچھی نظم ہے

  4. Asma Mirza said

    Thanks to faiza .. who posted thison her blog 🙂

    @anonymous: wazan wali poetry coming soon

    @ dm: don’t be copy all this in ur diary 🙂

    @shuaib safdar: thanks … i havent written it 🙂

  5. essjee said

    hmm waqai sometimes it happens.balkay most of the time with me….

RSS feed for comments on this post · TrackBack URI

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: