کب ياد ميں

کب ياد ميں تيرا ساتھ نہيں، کب بات ميں تري بات نہيں
صد شکر کہ اپني راتوں ميں اب ہجر کي کوئي رات نہيں

مشکل ہيں اگر حالات وہاں، دل بيچ آئيں جان دے آئيں
دل والوں کوچہ جاناں ميں کيا ايسے بھي حالات نہيں

جس دھج سے کوئي مقتل ميں گيا، وہ شان سلامت رہتي ہے
يہ جان تو آني جاني ہے، اس کي تو کوئي بات نہيں

ميدان وفا دربار نہیں، ياں نام و نسب کي پوچھ کہاں
عاشق تو کسي کا نام، کچھ عشق کسي کي ذات نہيں

گربازي عشق کي بازي ہے، جو چاہو لگا دو ڈر کيسا
گر جيت گئےتو کيا کہنا، ہارے بھي بازي مات نہيں

فيض احمد فيض کی ایک شاندار غزل

Advertisements

4 تبصرے »

  1. SHUAIB said

    آپ طنز و مزاح والی تحریریں بھی پوسٹ کیا کریں جس طرح پہلے آپ پوسٹ کرتی تھیں ۔

  2. A. K. said

    Zabardast!

  3. Asma said

    @Shuaib: hmmm .. i post funny posts few days back have a look urself :)back

    @al: thanks for coming by!

  4. SHUAIB said

    ہاں اسماء میں نے وہ گذشتہ تحریر پڑھا اور بہت اچھی بھی لگی ـ میں نے تو صرف گذارش کیا تھا کہ آئندہ بھی اسی طرح کی تحاریر لکھ کر پوسٹ کریں ـ

RSS feed for comments on this post · TrackBack URI

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: