موت کی تلاش میں

موت کی تلاش میں

ابھی اور جینا ہے

,زندگی سے ابھی روح کشید کرنی ہے

! ابھی مجھے جینا ہے

اسی جینے کی کشمکش میں

مجھے پِھر مرنا ہے

میں کون ہوں؟ راہِ زیست کی طلب کیا ہے؟

ابھی مجھے یہ جاننا ہے

اور اس کے لئیے خوف کو آنسوؤوں سے مٹانا ہے

ماضی کو مٹا کر

اپنا کَل چمکانا ہے

موت کی تلاش میں

ابھی اور جینا ہے

اسی جینے کی کشمکش میں

!مجھے پِھر مرنا ہے

اسماء translated "In search of death".

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: