تم نے بھی کونسا چاہا تھا مجھے

تم نے بھی کونسا چاہا تھا مجھے
میری باتیں بھی غلط، میرے ارادے بھی غلط
بے وفائی کا یہ خعد ساختہ بہتان بھی تسلیم مجھے
یہ بھی مانا کہ غم دہرجواں تھا‘ تو غم جواں
کو مری آنکھ کے آنسو نہ ملے
جب زمانوں کی یہ بے مہر ہوائیں مری سوچوں کو جلا دیتی ہیں
میں سوچتا ہوں
جب غم دہر کی پلکیں تری جانب مری شدت کو گھٹا دیتی ہیں
میں سوچتا ہوں
جب کبھی اپنی جفائیں مجھے خود اپنی نگاہوں میں گرا دیتی ہیں
میں سوچتا ہوں
تم نے بھی کون سا چاہا تھا مجھے

۔۔۔ خالد شریف ۔۔۔

Advertisements

2 تبصرے »

  1. باذوق said

    خالد شریف کا نام میں نے پہلی بار سنا ہے۔
    اچھی نہیں ، بہت اچھی نظم ہے۔
    مگر براہ مہربانی بہ احتیاط کمپوز کیا کریں ، اس نظم میں تو کمپوزنگ کی کچھ غلطیاں ہیں۔
    اور ہاں ، مہربانی ہوگی اگر میرا نام بھی بیاض میں شامل کر لیں ، شکریہ۔

  2. Asma said

    والسلام،

    میں آپکا نام بیاض میں شامل کر رہی ہوں، پتہ نہیں یہ غلطی کیسے رہ گئی گو کہ میں نے دیکھا تو تھا، لیکن پھر بھی معذرت۔

RSS feed for comments on this post · TrackBack URI

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: