ابتدائي حساب

حساب کے چار بڑے قاعدے ہيں

جمع، تفريق، ضرب، تقسيم

پہلا قاعدہ : جمع

جمع کے قاعدے پر عمل کرنا آسان نہيں

خصوصا مہنگائي کے دنوں میں سب کچھ خرچ ہوجاتا ہے

کچھ جمع نہيں ہوپاتا

جمع کا قاعدہ مختلف لوگوں کيلئے مختلف ہے

عام لوگوں کيلئے ١+١ = 1 1/2

کيونکہ 1/2 انکم ٹيکس والے لے جاتے ہيں

تجارت کے قاعدے سے جمع کرائيں تو 1+1 کا مطلب ہے گيارہ

رشوت کے قاعدے سے حاصل جمع اور زيادہ ہوجاتا ہے

قاعدہ وہي اچھا جس ميں حاصل جمع زيادہ آئے بشرطيکہ پوليس مانع نہ ہو

ايک قاعدہ زباني جمع خرچ کا ہوتا ہے

يہ ملک کے مسائل حل کرنے کا کام آتا ہے

آزمودہ ہے

۔۔۔ ابن انشاء ۔۔۔

Advertisements

1 تبصرہ »

  1. yeh hoi na itsy bitsy tiny tooni loony toony chooti mooti si mazay dar post

RSS feed for comments on this post · TrackBack URI

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: